تبلیغی جماعت کے بارے میں غلط سوچ

forums discuss Pakistani politics تبلیغی جماعت کے بارے میں غلط سوچ

  • Creator
    Topic
  • #125456 0 Likes | Like it now
    Participant
    Participant
    مومن
    • Topics:969
    • Replies:5753
    • Contributions:6722
    • Expert
    • ★★★

     

    تبلیغی جماعت والے کسی کی ذاتی زندگی میں مداخلت نہیں کرتے ۔۔۔کسی کی فیملی لائیف میں مداخلت کرنا تو دور کی بات ہے ۔۔۔

    گشت کے اداب میں اس بات پر ذور دیا جاتا ہے کہ جب کسی کے گھر دستک دیں یا گھنٹی بجائیں تو سب ساتھی دروازے کی ایک طرف کھڑے ہو جائیں تاکہ دروازے کے اندر نظر نہ پڑے ۔۔۔

    کیونکہ کے دروازے کے اندر جھنکنا ایسا ہے جیسے اپ اس کے گھر میں داخل ہو گئے اور کسی کی اجازت کے بغیر کسی کے گھر داخل ہونا حرام ہے ۔۔۔

    جب تبلیغی دوسروں کی ذاتی زندگی کا اتنا احترام کرتے ہیں تو دوسروں کو بھی چاھیے کہ ان کی فیملی لائیف پر انگلی نہ اٹھائے۔۔بلکہ کسی کی فیملی لائیف پر انگلی نہ اٹھائے۔۔۔

    طالب علمی کے دوران میرا  ایک بنگالی  دوست تھا جو فیسکس میں پی ایچ کر رہا تھا ۔۔۔

    ایک مرتبہ ہم اکھٹے سفر کر رہے تھے تو اس نے مجھ سے کہا کہ ہمارے محلےمیں ایک   بڑا پکا تبلیغی ہے لیکن اس کی بیٹی یونیورسٹی پڑھنے جاتی ہے ۔۔۔

    میں اس کی یہ بات سن کر حیران  رہ گیا کہ خود تو یہ پی ایچ ڈی کر رہا ہے اور اس کو اس لڑکی کے پڑھنے پر صرف اس لیے  اعتراض ہے کہ وہ ایک تبلیغی کی بیٹی ہے۔۔

    ایسا ہی ہے۔۔۔ دنیاوالوں کے بچے کچھ بھی کر لیں ہمیں کوئی اعتراض نہیں ہو گا لیکن اگر دین دار کے بچوں سے کوئی چھوٹی سی  غلطی ہو جائے تو ہم ان پر انگلیاں اٹھانا شروع کر دیتے ہیں ۔۔

    حدیث کا مفہوم ہے کہ انسان ایک بری بات کرتا ہے اس کو اس کا اندازہ بھی نہیں ہوتاکہ وہ کتنی بری ہے اور اس بری  بات کی وجہ سے وہ جہنم کے کھڑھوں میں ڈال دیا جاتا ہے ۔۔۔

    اور دوسری طرف  انسان ایک اچھی بات کرتا ہے اس کو اس کا اندازہ بھی نہیں ہوتاکہ وہ کتنی اچھی ہے اور اس اچھی بات کی وجہ سے وہ جنت کے اعلی درجوں میں پہنچ جاتا ہے۔۔۔

Viewing 7 replies - 1 through 7 (of 7 total)
  • Author
    Replies
  • #125481 0 Likes | Like it now
    Participant
    Participant
    مومن
    • Offline
      • Topics:969
      • Replies:5753
      • Contributions:6722
      • Expert
      • ★★★

    تبلیغی جماعت تو لوگوں نے اس جماعت کا نام رکھا ہے ۔۔۔اصل میں تجدید ایمان اس جماعت کا مقصد ہے  اور یہ ہی اس کا نام  بھی ہونا چاھیے تھا۔۔۔

    اس وقت  کافروں ..ہندوؤں گوشت خوروں سبزی خوروں کو تبلیغ کرکے اسلام کی چھتری تلے لانا  مقصود نہیں ہے بلکہ کلمہ پڑھنے والوں کو یاددیانی کرکے اسلام کی چھتری تلے لانا  مقصود ہے ۔۔۔

    تاکہ ہر کوئی خود اپنے پر محنت کرکر پہلے تو خود اپنے اپ کو ٹھیک کرے ۔۔

    دوسروں کو دعوت دینا تو بس ایک طریقہ کار ہے کہ جب ادمی دوسروں کو نیکی کی طرف بلاتا ہے تو  خود اس میں نیکی کرنے کا جذبہ پیدا ہوتا ہے ۔۔۔اور  جب دوسروں کو برائی سے روکتا ہے تو خود برائی سے بچنے کی کوشش کرتا ہے ۔۔۔

    #126069 0 Likes | Like it now
    Participant
    Participant
    مومن
    • Offline
      • Topics:969
      • Replies:5753
      • Contributions:6722
      • Expert
      • ★★★

    #126190 0 Likes | Like it now
    Participant
    Participant
    مومن
    • Offline
      • Topics:969
      • Replies:5753
      • Contributions:6722
      • Expert
      • ★★★

    کیاحضور اکرم ﷺ ۔نے وفد بنا بنا کر دوسرے ملکوں میں  نہیں بھیجے۔۔۔ ایلچی نہیں بھیجے۔۔اور جماعتیں نہیں بھیجیں  ؟

    اپکو چاھیے کہ اپ حیات صحابہ پڑھیں تو اپ پتہ چل جائے گا کہ صحابہ کا تبلیغ کرنے کا طریقہ کیسا تھا؟

    مصعب بن عمیر کی لائیف ہسٹری پڑھیں اپکی انکھیں کھل جائیں۔۔۔

    عام لوگوں کو سالانہ اجتماع تو نظر اتا ہے لیکن معاشرے میں تبلیغ کے ذریعے سے  جو تبدلیاں  پیدا ہوئی ہیں وہ نظر نہیں اتیں ۔۔۔

    سالانہ اجتماع کا مقصد اس کے علاوہ اور کوئی نہیں کہ دین کو اسان انداز سے عوام وناس تک پہنچایا جائے ۔۔۔

    عام انسان تین دن ۔۔چالیس دن ۔۔۔چار ماہ ۔۔۔دین سیکھنے کے لیے اللہ کے راستے میں نہیں نکل سکتے ۔۔۔جن کی کئی وجوھات ہیں ۔۔۔

    لیکن ایک دو دن کے لیے یا چند گھنٹوں کے لیے وقت فارغ کرنا اور دین کی بات سننے اور اجتماعی دعا میں شامل ہونا  ہر ایک کے لیے اتنا مشکل نہیں ۔۔۔۔

    #127260 0 Likes | Like it now
    Participant
    Participant
    مومن
    • Offline
      • Topics:969
      • Replies:5753
      • Contributions:6722
      • Expert
      • ★★★

    مومن بھائی اگر مقصد تجدید ایمان ہے تو اس کے لئے گھر اور جاب چھوڑ کر دوسرے شہر یا دوسرے ملک نکلنا اور اپنے بیوی بچوں کی ذمہ داریوں سے راہ فرار اختیار کرنے کی کیا ضرورت ہے؟ کیا یہ تجدید ایمان اپنے گھر میں رہتے ہوئے ویکنڈ پر چند گھنٹے وقف کرکے اپنے اردگرد والوں کو نیکی کی طرف بلا کر یہ فریضہ انجام نہیں دیا جا سکتا ہے؟ صاف ظاہر ہے کہ دوسروں کو بندہ کسی کام کی دعوت تب ہی دے سکتا ہے جب پہلے وہ خود وہ کام کرتا ہو کیا نیکی کی دعوت صرف نماز کی طرف بلانے تک محدود ہے یا اس میں دیگر نیک کام بھی شامل ہیں؟ اگر ایسا ہے تو تبلیغ پر نکلنے والوں کا زور نماز کی طرف بلانے تک محدود کیوں ہے؟ میں نے کبھی کسی تبلیغی جماعت کے آدمی کو لوگوں کو نماز کی طرف ںلانے کے علاوہ کوئی اور نیک کام عملی طور پر کرتے نہیں دیکھا ہے۔ ملک پر کوئی آفت مثلاً بارشیں، طوفان، زلزلہ وغیرہ آئے تو کبھی کسی تبلیغی جماعت کو سر گرم نہیں دیکھا ہے۔ کبھی کسی تبلیغی جماعت یا اس کے کسی آدمی کو کبھی کوئی فلاحی کام کرتے نہیں دیکھا ہے۔ اصل نیکی تو نمازیں پڑھنا نہیں ہے بلکہ انسانیت کی خدمت کرنا ہے۔ تبلیغی جماعت نے اس کام سے آنکھیں کیوں بند کر رکھی ہیں؟

    باوا جی ۔۔۔ اپ نے تو  اتنے سوال کر دیے ہیں کہ ان کے جواب دینے بیٹھوں تو گھر کی دوسری ذمہ داریاں نبھانی مشکل ہو جائیں گیں ۔۔۔اب سہری کے بعد تھوڑا ٹائم ملا ہے تو کوشش کرتا ہوں ۔۔۔

    اپ کی بات درست ہے کہ گھر پر بھی ادمی تجدید ایمان کر سکتا ہے اور اپنے ارد گرد والوں کو نیکی کی طرف بلا سکتا ہے ۔۔۔

    مسلہ بس یہ ہے کہ ان کاموں کے لیے ایمان کا مضبوط ہونا لازمی ہے ۔۔۔اور ادمی کا ایمان گھر بیٹھ کر نہیں بنتا ۔۔۔ایمان قربانی مانگتا ہے ۔۔اس کے لیے جان ۔ مال اور وقت  کی قربانی دینی پڑتی ہے ۔۔۔۔

    جیسے ابراہیم علیہ سلام  کو یہ جاننے کے لیے کہ اللہ مردوں کو پھر کیسے زندہ کرے گا ۔۔۔چار پرندوں کو پہلے پالنا پڑا اور بھر ان کو ذبہ کر کر ان کا قیمہ چار پہاڑوں پر ڈالنا پڑا ۔۔۔یعنی جان ۔ مال اور وقت کی قربانی دینی پڑی تب ان کا ایمان بنا۔۔۔

    ایسے ہی ادمی جب اپنا جان ۔ مال اور وقت  اللہ کے راستے میں قربان کرتا ہے تو اللہ اس کے ایمان کو مضبوط کرتے ہیں اور موت کے وقت اس کو ایمان پر قائم رکھتے ہیں ۔ ۔۔

    اورویسے بھی  ادمی ساری عمر چار ماہ نہیں لگاتا ۔۔۔بس زندگی میں ایک مرتبہ ۔۔۔اور چار ماہ لگانے کے بعد ادمی اپنے مقام پر ہی رہ کرمقامی کام سے جڑا رہتا ہے ۔۔۔یعنی ایمان کی تجدید کرتا ہے اور اپنے ارد گرد والوں کو نیکی کی طرف بلاتا ہے۔۔۔

    اللہ کے حکموں میں سب سے بڑا حکم نماز کا ہے ۔۔۔نماز فحش اور برائی سے روکتی ہے ۔۔۔اگر ہماری نمازیں ٹھیک ہو جائیں تو دوسرے اعمال بھی ٹھیک ہو جائیں گیں ۔۔اسلام میں کلمے کے بعد نماز ہے ۔۔۔

    حدیث کا مفہوم ہے کہ جب تم کسی کو اندھیروں میں مسجد کی طرف جاتے دیکھو تو اس کے ایمان کی گواہی دو۔۔۔

    تبلیغ کے چھ نمبروں میں کلمے اور  نماز کے بعد ۔۔۔علم و ذکر۔۔۔اخلاق ۔۔۔اخلاص اور نیکی کا حکم کرنا اور برائی سے روکنا ہے۔۔۔

    تبلیغی اپنے محلوں میں رہ کر ایک دوسرے کی مدد کرتے نہ کے میڈیا پر ا کر اس کا اعلان کرتے ہیں ۔۔۔۔

    #127272 0 Likes | Like it now
    Participant
    Participant
    مومن
    • Offline
      • Topics:969
      • Replies:5753
      • Contributions:6722
      • Expert
      • ★★★
    Ok momin bhai take your time. no problem. Tablighee jamat should be updated with technology. There is no way to use old outdate method. Tableeghis can use loud speaker for their sermons what is problem in using Technology. Tariq Jameel go to tableegh on land cruiser. If he really love talibghis why dont he educate them. They will get jobs and pray for him. Actually he desnot want them to be educated because one they started thinking for themselves… no one will list his fairy tales

    شکریہ ۔۔۔مجھے حیرت ہوتی ہے اپ لوگوں پر ۔۔۔۔ایک طرف اپ کہتے ہیں کہ دین کی تبلیغ کے لیے  ٹیکنالوجی کا استعمال کریں اور دوسری طرف جو عالم دین  ٹیکنالوجی کے ذریعے دین کی بات کرتے ہیں تو ان کو  ڈرمے باز اور بکواسی کا لقب دیتے ہیں ۔۔۔

    اصل میں بات یہ ہے کہ جیسے اللہ کسی کے محتاج نہیں اس طرح دین کیسی کا محتاج نہیں ۔۔۔

    اللہ جس سے چاہتے ہیں اپنے  دین کے پھیلانے کا کام لیتے ہیں ۔۔۔دین کو پھیلانے کے لیے نہ  ہی وہ میرے گشت  کے محتاج ہیں  نہ کسی عالم دین کے بیان کے اور نہ ہی کسی سائنسدان کے نہ ہی کسی     ٹیکنالوجی کے۔۔

    اللہ کی ذات بے نیاز ہے ۔۔اللہ کے راز اللہ ہی جانتا ہے ۔۔۔لیکن سنت اللہ یہ ہے کہ وہ نیک لوگوں سے محبت کرتا ہےاور نیکی کو ضائع  نہیں کرتا ۔۔۔چاہے کتنی ہی چھوٹی کیوں نہ ہو۔۔۔

    انسان  جب نیکی کی نیت کرتا ہے چاہے اس نے وہ نیکی نہ بھی کی ہو  پھر بھی اس کو اس کا اجر مل جاتا ہے۔۔۔

    اور گناہ  کی نیت کرتا ہے تو جب تک  ادمی وہ گناہ نہ کر لے اس وقت تک  وہ گناہ شمار نہیں ہوتا۔۔بلکہ اگر انسان کسی گناہ سے روک جائے تو اس کا بھی اسے اجر ملتا ہے ۔۔۔

    نیکی کے بے شمار درجے ہیں ۔۔۔لا اله الا الله کہنا نیکی ہے۔۔۔راستے سے کوئی رکاوٹ ہٹا دینا نیکی ہے ۔۔۔کسی سے مسکرا کر بات کرنا نیکی ہے ۔۔۔نیکی کی طرف بلانا اور برائی سے روکنا نیکی ہے ۔۔۔

    اب ادمی جیسے بھی چاہے ان نیکیوں کو کما سکتا ہے ۔۔۔

    میرا تجربہ یہ ہے کہ انسان دوسرے  انسانوں سے مل کر یہ نیکیاں اسانی سے کما سکتا بنسبت کمپیوٹر یا موبائل فون پر بیٹھ کر دوسرو ں پر اعتراض کرنے سے یا اپنی بات منوانے کے لیے دوسروں کو نامناسب الفاظ سے پکارنے سے ۔۔  ۔

    #127568 0 Likes | Like it now
    Participant
    Participant
    مومن
    • Offline
      • Topics:969
      • Replies:5753
      • Contributions:6722
      • Expert
      • ★★★

    بیداری ۔۔۔ اپ اس تھرڈ کا مطعالہ کریں ۔۔۔شاید اپ کو اس سے تبلیغی جماعت کے بارے میں درست معلومعات مل جائے ۔۔۔

    #127693 0 Likes | Like it now
    Participant
    Participant
    مومن
    • Offline
      • Topics:969
      • Replies:5753
      • Contributions:6722
      • Expert
      • ★★★

Viewing 7 replies - 1 through 7 (of 7 total)

You must be logged in to reply to this topic.