بد دیانت عدلیہ – کانا چیف جسٹس – کھلا چیلنج

forums discuss Pakistani politics بد دیانت عدلیہ – کانا چیف جسٹس – کھلا چیلنج

  • This topic has 170 replies, 13 voices, and was last updated 2 years ago by مومن.
  • Creator
    Topic
  • #100412 0 Likes | Like it now
    Bawa
    • Topics:441
    • Replies:5095
    • Contributions:5536
    • Expert
    • ★★★

    دنیا کی تاریخ بد دیانت عدلیہ اور ایک آنکھ بند کرکے ایک آنکھ سے انصاف کرنے والے چیف جسٹسز سے بھری ہوئی ہے

    نہ کل ایسی بد دیانت عدلیہ اور کانے چیف جسٹسز کی کمی تھی اور نہ ہی آج ہے

    بد قسمتی سے ہمارا ملک ایسی بد دیانت عدلیہ اور ایسے کانے چیف جسٹسز سے مالا مال ہے

    جزباتی بھائی نے فرمایا ہے کہ
    .
    .

    یاالله ، پاکستانی قوم کی آزمایش کب ختم ہو گی

    بڑی مشکل سے ایک آنکھ والے منصف جسٹس افتخار چوہدری سے جان چھوٹی تھی جس کا انصاف کا پلڑہ صرف ایک طرف ہی جھکتا تھا

    اب اس فورم پر ایک آنکھ والا منصف نیا جنم لے کر لوگوں کو ڈرا رہا ہے

    بنے ہیں اہلِ ہوس، مدعی بھی منصف بھی
    کسے وکیل کریں، کس سے منصفی چاہیں

    ف ج

    .
    .

    بد دیانت عدلیہ اور کانے چیف جسٹسز صرف انسانوں کی تاریخ میں ہی نہیں بلکہ جانوروں کی تاریخ میں بھی پائے جاتے ہیں

    جانوروں کی تاریخ سے بد دیانت عدلیہ اور کانے چیف جسٹس کا ایک واقعہ حاضر خدمت ہے

    ===================

    جنگل میں ایک اونٹ زخمی ہو گیا اور چلنے پھرنے کے قابل نہ رہا. کچھ دن ارد گرد کی گھاس کھا کر اس نے گزارہ کر لیا لیکن جلد ہی نوبت فاقوں پر آ گئی. ایک دن ایک چالاک لومڑی کا ادھر سے گزر ہوا تو وہ اونٹ کو زخمی اور فاقوں سے نڈھال دیکھکر اس کے پاس پہنچ گئی اور اسکا حال احوال پوچھا. آخر کار لومڑی اور اونٹ میں طے پایا کہ لومڑی اونٹ کی مرہم پٹی اور کھانا دے گی اور جب اونٹ تندرست ہو جائے گا تو وہ لومڑی کی خدمات کے عوض اپنے جسم میں سے گوشت کا ایک ٹکڑا لومڑی کو دے گا. تھوڑے عرصے بعد اونٹ تندرست ہوگیا اور چلنے پھرنے گا. لومڑی نے اسے اسکا وعدہ یاد دلایا اور گوشت کا ٹکڑا مانگا. اونٹ نے کہا کہ تم میرے جسم پر کہیں کاٹ کر گوشت کا ٹکڑا اتار لو. لومڑی مکار تھی اور اونٹ سے کہنے لگی کہ تم نے تو زبان کے ٹکڑے کا وعدہ کیا تھا اور میں زبان کا ٹکڑا ہی لوں گی. اونٹ بولا کہ زبان کے ٹکڑے کا نہیں صرف گوشت کے ٹکڑے کا طے ہوا تھا. خیر جھگڑا بڑھا تو دونوں کسی تیسرے فریق کے پاس اپنے کیس لے جانے اور اس سے فیصلہ کروانے پر متفق ہو گئے

    لومڑی بند کے پاس گئی اور اسے کہا کہ میں نے ایک شریف اونٹ کو پھنسا ہوا ہے. تم جج بن کر فیصلہ میرے حق میں دو گے تو اونٹ زبان کاٹ لینے کی وجہ سے کچھ کھا نہیں سکے گا اور مر جائے گا. پھر ہم دونوں اسکا گوشت خوب مزے سے کھائیں گے. بندر لالچی تھا اور مان گیا

    بندر نے بد دیانت عدالت لگائی اور ایک آنکھ والے کانے جسٹس کا کردار ادا کرتے ہوئے فیصلہ لومڑی کے حق میں دے دیا

    اونٹ زبان کا ٹکڑا دینے پر تیار ہو گیا. لومڑی نے بندر سے کہا کہ اونٹ کی زبان کا ٹکڑا کاٹنے سے پہلے اونٹ کی ٹانگیں باندھ لیں ورنہ وہ تکلیف سے چھڑا کر بھاگ جائے گا. لومڑی بولی کہ میری دم تو بہت چھوٹی ہے اور اس سے گزارہ نہیں ہوگا لیکن تمھاری دم لمبی ہے اور اسکے ساتھ اونٹ کی ٹانگیں آسانی سے باندھی جا سکتی ہیں. بندر رضا مند ہوگیا اور اونٹ کی ٹانگیں بندر کی دم سے باندھ دی گئیں

    جب لومڑی نے اونٹ کی زبان کا ٹکڑا نکالنے کی کوشش کی تو اونٹ بلبلا تھا اور پورا زور لگا کر غصے میں اپنی ٹانگیں چھڑانے کی کوشش کی. اس کوشش میں بندر کی دم ٹوٹ کر دور جا گری اور لومڑی اونٹ کو غصے میں دیکھکر بھاگ گئی. لومڑی کے بعد بندر بھی اپنی جان بچانے کے لیے بغیر دم کے بھاگ نکلا. اگلے دن لومڑی نے دور سے بندر کو بغیر دم لڑکھڑاتے آتے دیکھا تو اسکی ہنسی نکل گئی لیکن وہ اپنی ہنسی پر قابو پاتے ہوئے بولی کہ بندر میاں تم نے بتایا ہی نہیں کہ کل میرے آنے کے بعد کیا ہوا تھا؟ بندر اپنی ٹوٹی ہوئی دم دکھاتے ہوئے بولا کہ اونٹ نے زور لگا کر اسکی دم توڑ دی تھی

    لومڑی ہنستی ہوئی بولی کہ

    بد دیانت عدلیہ اور کانےچیف جسٹس کا یہی انجام ہوتا ہے

    :mrgreen: :mrgreen: 😈 😈

    ====================

    کھلا چیلنج

    جو کوئی یہ دعوا کرتا ہے کہ پی کے پولیٹکس پر میں نے گالیوں کا آغاز کیا یا میں نے سب سے پہلے کسی کو ماں، باپ، بہناور بیٹی کی گالی دی ہے تو اس کے لیے میرا کھلا چیلنج ہے کہ وہ میرے پاس آئے, میں نا قابل تردید ثبوت دیتا ہوں کہ وہاں نہ تو میں نے گالیوں کی ابتدا کی تھی اور نہ ہی سب سے پہلے کسی کو ماں بہن کی گلی دی تھی

    یہ کوڑھی تھے جنہوں نے وہاں ماں، بات، بہن اور بیٹیوں کی گالیوں کا آغاز، انتہا اور اختتام کیا

    صرف دیانت دار عدلیہ اور دونوں آنکھوں سے دیکھنے والا چیف جسٹس مجھ سے یہ ثبوت لے سکتا ہے – کسی بد دیانت عدلیہ اور کانے چیف جسٹس کو رابطہ کرنے کی ضرورت نہیں ہے

    بہت شکریہ

    =================

    نوٹ: سائیٹ بھائی پہلے ہی کچھ ثبوت سامنے لا چکے ہیں – مزید ثبوت ہر وقت دستیاب ہیں

You must be logged in to reply to this topic.